ظہور امام مہدی کی زمینہ سازی وقت کی اہم ضرورت ہے۔ سائرہ ابراہیم

منجی بشریت کے یوم ولادت کی مناسبت سے زینب کبریٰ اکیڈمی گلگت میں خواتین کا اجتماع منعقد ہوا جس سے مجلس و حدت مسلمین شعبہ خواتین کی رہنما محترمہ سائرہ ابراہیم اور محترمہ ثوبیہ نے خطاب کیا۔انہوں نے اپنے خطاب میں معاشرتی مسائل میں خواتین کی اہمیت اور ان کی ذمہ داریوں پر روگلگت ( ایم ڈبلیو ایم میڈیا سیل)ظہور امام مہدی کی زمینہ سازی وقت کی اہم ضرورت ہے۔اپنے بچوں کوجدید علوم سے آراستہ کرنے کے ساتھ ساتھ اخلاقی تربیت کے ذریعے ہی مسائل پر قابو پایا جاسکتا ہے۔ہمیں اپنے آنے والی نسل کو جدید زمانے کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کیلئے ضروری ہے کہ ہم اپنے بچوں کی تربیت پر خصوصی توجہ دیں۔
منجی بشریت کے یوم ولادت کی مناسبت سے زینب کبریٰ اکیڈمی گلگت میں خواتین کا اجتماع منعقد ہوا جس سے مجلس و حدت مسلمین شعبہ خواتین کی رہنما محترمہ سائرہ ابراہیم اور محترمہ ثوبیہ نے خطاب کیا۔انہوں نے اپنے خطاب میں معاشرتی مسائل میں خواتین کی اہمیت اور ان کی ذمہ داریوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ہم آج گوناگوں مسائل سے دوچار ہیں اور ان مسائل کی بنیادی وجہ دینی تعلیمات سے انحراف کا نتیجہ ہے۔منجی بشریت کے ظہور کا عقیدہ رکھنے والوں کو ہاتھ پر ہاتھ رکھ کردھرے بیٹھنا اور معاشرے کے مسائل سے لاتعلق رہنا دینی اقدار سے انحراف کے مترادف ہے اور معاشرے کی اصلاح میں خواتین کی عظیم ذمہ داریاں ہیں جو شہزادی کونین کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ادا کی جاسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمیں معاشرتی جبر کو توڑتے ہوئے صبر واستقامت کے ساتھ محروم ومحکوم عوام کے بنیادی حقوق اور عدل پر مبنی معاشرے کے قیام کیلئے کردار ادا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ عالمی انقلاب کیلئے جس قدر مردوں کی ذمہ داریاں ہیں اسی حساب سے خواتین پر بھی ذمہ داریاں عائد ہیں ،جب تک ہم اپنی ذمہ داریوں سے آگاہ نہیں ہونگے تب تک عملی میدان میں وارد نہیں ہوسکتے لہٰذا خود کو اعلیٰ اخلاقی اقدار سے لیس کرکے میدان عمل میں قدم بڑھانا ہوگا اور مجلس وحدت مسلمین اس سلسلے میں ہرممکن رہنمائی کیلئے ہمہ وقت تیار ہے۔شنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ہم آج گوناگوں مسائل سے دوچار ہیں اور ان مسائل کی بنیادی وجہ دینی تعلیمات سے انحراف کا نتیجہ ہے۔منجی بشریت کے ظہور کا عقیدہ رکھنے والوں کو ہاتھ پر ہاتھ رکھ کردھرے بیٹھنا اور معاشرے کے مسائل سے لاتعلق رہنا دینی اقدار سے انحراف کے مترادف ہے اور معاشرے کی اصلاح میں خواتین کی عظیم ذمہ داریاں ہیں جو شہزادی کونین کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ادا کی جاسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمیں معاشرتی جبر کو توڑتے ہوئے صبر واستقامت کے ساتھ محروم ومحکوم عوام کے بنیادی حقوق اور عدل پر مبنی معاشرے کے قیام کیلئے کردار ادا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ عالمی انقلاب کیلئے جس قدر مردوں کی ذمہ داریاں ہیں اسی حساب سے خواتین پر بھی ذمہ داریاں عائد ہیں ،جب تک ہم اپنی ذمہ داریوں سے آگاہ نہیں ہونگے تب تک عملی میدان میں وارد نہیں ہوسکتے لہٰذا خود کو اعلیٰ اخلاقی اقدار سے لیس کرکے میدان عمل میں قدم بڑھانا ہوگا اور مجلس وحدت مسلمین اس سلسلے میں ہرممکن رہنمائی کیلئے ہمہ وقت تیار ہے۔

About Ali Haider