تکفیری سوچ اور دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر قابو پانے کیلئے لازم ہے کہ حسین ابن علی کی پیروی کی جائے۔سید راحت حسین الحسینی

گلگت ( ایم ڈبلیو ایم میڈیا سیل) دنیا بھر کی طرح آج گلگت بلتستان میں شہدائے کربلا کا چہلم انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا۔شہدائے کربلا کے چہلم کے موقع پر امامبارگاہوں اور حسینیہ میں مجالس عزا کا انعقاد ہوا جس میں مقررین نے شہدائے کربلا کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ظالم حکمرانوں سے نبرد آزما ہونے کیلئے کردار حضرت زینب ؑ کو مشعل راہ قرار دیا۔
چہلم حضرت امام حسین علیہ السلام کے موقع پر گلگت ڈویژن میں سب سے بڑا اجتماع انجمن حسینیہ نگر خزانہ روڈ پر ہوا جس میں آس پاس کے مضافات سے عزاداروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔مجلس سے خطاب کرتے ہوئے سید راحت حسین الحسینی نے تکفیری سوچ اور دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر قابو پانے کیلئے لازم ہے کہ حسین ابن علی کی پیروی کی جائے۔مٹھی بھر دہشت گردوں نے امن عالم کو خطے سے دوچار کردیا ہے،شام،لبنان،عراق،افغانستان،پاکستان اور یمن میں روزانہ بے گناہ انسانوں کا خون بہایا جارہا ہے،اسلام دشمن طاقتیں مسلمانوں کے درمیان اختلافات کو ہوا دیکر تکفیری گروہوں کی سوچ کو پروان چڑھارہی ہیں اور ہمارے نام نہاد مسلم حکمران سامراجی سازشوں کا راستہ روکنے کی بجائے خود ان سازشوں کا شکار ہورہے جس کی وجہ سے آج تقریباً مسلم ممالک مغرب کے دست نگر بنے ہوئے ہیں اور ان کے جرائم میں برابر کے شریک ہیں۔مسلم حکمران جب تک استعمار کے سرغنہ امریکہ اور اس کے حواریوں سے قطع تعلق نہیں کرینگے ملکی وسائل غیروں کے ہاتھ میں ہونگے ۔مجلس کے اختتام پر عزاداران حسین کا پرشکوہ جلوس برآمد ہوا جو امامیہ جامع مسجد سے ہوتا ہوا شہید علی محمد کے مزار پر اختتام پذیر ہوا۔ شہدائے کربلا کے چہلم کے موقع پر ضلع نگر کا سب سے بڑا اجتماع غلمت نگر میں منعقدہو جبکہ ضلع ہنزہ میں گنش کے مقام پر عزاداروں نے جلوس نکال کر شہدائے کربلا کو خراج تحسین پیش کیا۔ضلع استور،ضلع سکردو،ضلع شگر،ضلع کھرمنگ اور ضلع گانچھے میں بھی شہدائے کربلا کا چہلم انتہائی عقیدت و احترم کے ساتھ منایا گیا۔

About مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.