دیامر کالعدم تنظیموں اور دہشت گردوں کی آماجگاہ بن چکا ہے علاقے میں فوجی آپریشن ناگزیر ہے۔

صوبائی حکومت کی پہلے تین مہینوں میں ہی اصلیت سامنا آنا شروع ہوگئی ہے ایس سی او کے مغویوں کو بازیاب کرانے میں حکومت عدم دلچسپی سے کام لے رہی ہے اخباری بیانات سے دہشت گردی کا صفایا ممکن ہوتا تو آج یہ نوبت نہ آتی۔دیامر کالعدم تنظیموں اور دہشت گردوں کی آماجگاہ بن چکا ہے علاقے میں فوجی آپریشن ناگزیر ہے۔
مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ نیئر عباس مصطفوی نے کہا کہ حالیہ دنوں میں ضلع دیامر میں ایس سی کے انجینئرز کا اغوا کوئی انوکھا واقع نہیں اس سے قبل اسی علاقے میں مسافروں، سیاحوں، افواج پاکستان اور پولیس کے اعلیٰ آفیسروں کو نشانہ بنایا جاچکا ہے اور دہشت گرد پورے علاقے میں دندناتے پھر رہے ہیں ان کی گرفتاری سے حکومت کترارہی ہے ۔چھشی پولیس چوکی پر حملے کرنے والے ملزموں کی تاحال عدم گرفتاری سے صاف ظاہر ہورہا ہے کہ حکومت دہشت گردوں کی گرفتاری میں مخلص ہی نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجینی محلہ گلگت میں فائرنگ کرکے تین شیعہ جوانوں کو شدید زخمی کرنے والے مجرم وزیر اعلیٰ کے محلے میں موجود ہیں ۔عاشورا کے روز سونیکوٹ میں عزاداروں پر فائرنگ کرنے والے اصل مجرموں کی گرفتاری کی بجائے خانہ پری کی جارہی ہے،حکومت ہمارے صبر کو کمزوری پر محمول نہ کرے انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں۔ہم عوامی مینڈیٹ کا احترام کرتے ہیں اور حکومت کو اپنی کارکردگی کو بہتر بنانے کا پورا موقع فراہم کرتے ہیں لیکن اگر ظلم و زیادتی حد سے بڑھ جائے تو پھر اقتدار کے حکومتی گھمنڈ کو خاک میں ملانے کا گرُ بھی ہم جانتے ہیں۔

About مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.